موٹر سایئکل چوری روکنے کے لئے سندھ حکومت نے ٹریکنگ ڈیوائس لازمی قرار دے دیا

کراچی: حکومت سندھ نے صوبے بھر میں موٹرسائیکل مالکان کے لئے ٹریکنگ ڈیوائسز کو لازمی قرار دے دیا تا کہ موٹرسائیکل چھیننے کے جرم کو روکا جاسکے۔
یہ فیصلہ وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ کی زیرصدارت کابینہ کے اجلاس میں موٹر وہیکل آرڈیننس ، 1965 میں ترمیم کی منظوری کے بعد لیا گیا۔
محکمہ سندھ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن صرف ان موٹرسائیکلوں کو رجسٹر کرے گی جس میں ٹریکنگ ڈیوائسز نصب ہیں۔
موٹرسائیکل کمپنیوں کو بھی موٹرسائیکلوں میں ٹریکر لگانے کا پابند بنایا جائے گا۔
اس تجویز کو پہلی بار 2017 کے آخر میں پیش کیا گیا تھا جب حکومت نے اعلان کیا تھا کہ اسٹریٹ جرائم کو روکنے کے لئے صوبے بھر میں تمام موٹرسائیکلوں پر ٹریکنگ ڈیوائسز لگائے جائیں۔
کراچی میں موٹر سائیکل کی چوری ایک عام اسٹریٹ کرائم ہے جس میں ہر ماہ سیکڑوں موٹرسائیکلیں چوری ہوتی ہیں یا چھین لی جاتی ہیں۔

مزید پڑھیں:   چین کی بڑی موبائل کمپنیاں گوگل پلے سٹور کے متبادل پر متفق

اپنا تبصرہ بھیجیں